جاوید اختر

  • 1945
  • ممبئی

فلم اسکرپٹ رائٹر، نغمہ نگار اور شاعر۔ ’ شعلے‘ اور ’ دیوار‘ جیسی فلموں کے لئے مشہور۔

فلم اسکرپٹ رائٹر، نغمہ نگار اور شاعر۔ ’ شعلے‘ اور ’ دیوار‘ جیسی فلموں کے لئے مشہور۔

Editor Choiceمنتخب Popular Choiceمقبول
غزلصنف
0 ا ,بہانہ ڈھونڈتے رہتے ہیں کوئی رونے کا2
0 ا ,جدھر جاتے ہیں سب جانا ادھر اچھا نہیں لگتا2
0 ا ,کھلا ہے در پہ ترا انتظار جاتا رہا2
0 ا ,میں پا سکا نہ کبھی اس خلش سے چھٹکارا2
0 ا ,وہ زمانہ گزر گیا کب کا0
0 ا ,یاد اسے بھی ایک ادھورا افسانہ تو ہوگا1
0 ا ,یقین کا اگر کوئی بھی سلسلہ نہیں رہا0
0 ابھی ضمیر میں تھوڑی سی جان باقی ہے0
0 آج میں نے اپنا پھر سودا کیا0
0 بظاہر کیا ہے جو حاصل نہیں ہے0
0 پیاس کی کیسے لائے تاب کوئی0
0 جینا مشکل ہے کہ آسان ذرا دیکھ تو لو0
0 درد اپناتا ہے پرائے کون0
0 درد کچھ دن تو میہماں ٹھہرے0
0 زندگی کی آندھی میں ذہن کا شجر تنہا0
0 سوکھی ٹہنی تنہا چڑیا پھیکا چاند0
0 شکر ہے خیریت سے ہوں صاحب0
0 غم ہوتے ہیں جہاں ذہانت ہوتی ہے0
0 کن لفظوں میں اتنی کڑوی اتنی کسیلی بات لکھوں0
0 گ ,دکھ کے جنگل میں پھرتے ہیں کب سے مارے مارے لوگ0
0 ل ,دل میں مہک رہے ہیں کسی آرزو کے پھول0
0 م ,خواب کے گاؤں میں پلے ہیں ہم0
0 میرے دل میں اتر گیا سورج0
0 میں خود بھی سوچتا ہوں یہ کیا میرا حال ہے0
0 میں کب سے کتنا ہوں تنہا تجھے پتا بھی نہیں0
0 ن ,درد کے پھول بھی کھلتے ہیں بکھر جاتے ہیں0
0 ن ,دست_بردار اگر آپ غضب سے ہو جائیں2
0 ن ,مثال اس کی کہاں ہے کوئی زمانے میں2
0 ن ,مجھ کو یقیں ہے سچ کہتی تھیں جو بھی امی کہتی تھیں2
0 نگل گئے سب کی سب سمندر زمیں بچی اب کہیں نہیں ہے0
0 نہ خوشی دے تو کچھ دلاسہ دے0
0 و ,جب آئینہ کوئی دیکھو اک اجنبی دیکھو0
0 و ,جسم دمکتا، زلف گھنیری، رنگیں لب، آنکھیں جادو0
0 ی ,پھرتے ہیں کب سے در_بدر اب اس نگر اب اس نگر اک دوسرے کے ہم_سفر میں اور مری آوارگی2
0 ے ,دل کا ہر درد کھو گیا جیسے0
0 ے ,ذرا موسم تو بدلا ہے مگر پیڑوں کی شاخوں پر نئے پتوں کے آنے میں ابھی کچھ دن لگیں_گے0
0 ے ,ساری حیرت ہے مری ساری ادا اس کی ہے2
0 ے ,سچ یہ ہے بیکار ہمیں غم ہوتا ہے0
0 ے ,شہر کے دکاں_دارو کاروبار_الفت میں سود کیا زیاں کیا ہے تم نہ جان پاؤ_گے2
0 ے ,کبھی کبھی میں یہ سوچتا ہوں کہ مجھ کو تیری تلاش کیوں ہے2
0 ی ,کس لئے کیجے بزم_آرائی0
0 ے ,کل جہاں دیوار تھی ہے آج اک در دیکھیے0
0 ے ,ہم تو بچپن میں بھی اکیلے تھے0
0 ے ,ہم نے ڈھونڈیں بھی تو ڈھونڈیں ہیں سہارے کیسے0
0 ے ,ہمارے دل میں اب تلخی نہیں ہے0
0 ی ,ہمارے شوق کی یہ انتہا تھی0
0 ے ,وہ ڈھل رہا ہے تو یہ بھی رنگت بدل رہی ہے0
0 ے ,یہی حالات ابتدا سے رہے0
0 یہ تسلی ہے کہ ہیں ناشاد سب0
0 یہ دنیا تم کو راس آئے تو کہنا0
0 یہ مجھ سے پوچھتے ہیں چارہ گر کیوں0
seek-warrow-w
  • 1
arrow-eseek-e1 - 51 of 51 items