Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر
Khalid Mahmood's Photo'

خالد محمود

1948 | دلی, انڈیا

خالد محمود

غزل 19

نظم 1

 

اشعار 2

بچے میری انگلی تھامے دھیرے دھیرے چلتے تھے

پھر وہ آگے دوڑ گئے میں تنہا پیچھے چھوٹ گیا

شاید کہ مر گیا مرے اندر کا آدمی

آنکھیں دکھا رہا ہے برابر کا آدمی

 

کتاب 134

آڈیو 8

آنکھوں میں دھوپ دل میں حرارت لہو کی تھی

برائے تشنہ_لب پانی نہیں ہے

جھپٹتے ہیں جھپٹنے کے لیے پرواز کرتے ہیں

Recitation

متعلقہ شعرا

"دلی" کے مزید شعرا

Recitation

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
بولیے