Khumar Barabankavi's Photo'

خمارؔ بارہ بنکوی

1919 - 1999 | بارہ بنکی, انڈیا

مقبول عام شاعر، فلمی نغمے بھی لکھے

مقبول عام شاعر، فلمی نغمے بھی لکھے

خمارؔ بارہ بنکوی

غزل 30

اشعار 41

وہی پھر مجھے یاد آنے لگے ہیں

جنہیں بھولنے میں زمانے لگے ہیں

بھولے ہیں رفتہ رفتہ انہیں مدتوں میں ہم

قسطوں میں خودکشی کا مزا ہم سے پوچھئے

دشمنوں سے پیار ہوتا جائے گا

دوستوں کو آزماتے جائیے

محبت کو سمجھنا ہے تو ناصح خود محبت کر

کنارے سے کبھی اندازۂ طوفاں نہیں ہوتا

  • شیئر کیجیے

خدا بچائے تری مست مست آنکھوں سے

فرشتہ ہو تو بہک جائے آدمی کیا ہے

  • شیئر کیجیے

نعت 1

 

کتاب 6

 

تصویری شاعری 12

ویڈیو 41

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر

خمارؔ بارہ بنکوی

خمارؔ بارہ بنکوی

خمارؔ بارہ بنکوی

خمارؔ بارہ بنکوی

خمارؔ بارہ بنکوی

خمارؔ بارہ بنکوی

خمارؔ بارہ بنکوی

خمارؔ بارہ بنکوی

خمارؔ بارہ بنکوی

Aankhon ke charagon mein ujaale na rahenge

خمارؔ بارہ بنکوی

Aye maut unko bhulaye zamane guzar gaye

خمارؔ بارہ بنکوی

Chala Hoon Main Kooche Se

خمارؔ بارہ بنکوی

Kabhi sher-o-naghma ban ke

خمارؔ بارہ بنکوی

اک پل میں اک صدی کا مزا ہم سے پوچھئے

خمارؔ بارہ بنکوی

اکیلے ہیں وہ اور جھنجھلا رہے ہیں

خمارؔ بارہ بنکوی

اکیلے ہیں وہ اور جھنجھلا رہے ہیں

خمارؔ بارہ بنکوی

اے موت انہیں بھلائے زمانے گزر گئے

خمارؔ بارہ بنکوی

بات جب دوستوں کی آتی ہے

خمارؔ بارہ بنکوی

بات جب دوستوں کی آتی ہے

خمارؔ بارہ بنکوی

ترے در سے اٹھ کر جدھر جاؤں میں

خمارؔ بارہ بنکوی

تو چاہئے نہ تیری وفا چاہئے مجھے

خمارؔ بارہ بنکوی

جھنجھلائے ہیں لجائے ہیں پھر مسکرائے ہیں

خمارؔ بارہ بنکوی

حسن جب مہرباں ہو تو کیا کیجیے

خمارؔ بارہ بنکوی

دل کو تسکین_یار لے ڈوبی

خمارؔ بارہ بنکوی

غم دنیا بہت ایذا_رساں ہے

خمارؔ بارہ بنکوی

مجھ کو شکست_دل کا مزا یاد آ گیا

خمارؔ بارہ بنکوی

نہ ہارا ہے عشق اور نہ دنیا تھکی ہے

خمارؔ بارہ بنکوی

وہ ہمیں جس قدر آزماتے رہے

خمارؔ بارہ بنکوی

وہ ہمیں جس قدر آزماتے رہے

خمارؔ بارہ بنکوی

وہی پھر مجھے یاد آنے لگے ہیں

خمارؔ بارہ بنکوی

کبھی شعر_و_نغمہ بن کے کبھی آنسوؤں میں ڈھل کے

خمارؔ بارہ بنکوی

کیا ہوا حسن ہے ہم_سفر یا نہیں

خمارؔ بارہ بنکوی

ہم انہیں وہ ہمیں بھلا بیٹھے

خمارؔ بارہ بنکوی

ہنسنے والے اب ایک کام کریں

خمارؔ بارہ بنکوی

یہ مصرع نہیں ہے وظیفہ مرا ہے

خمارؔ بارہ بنکوی

یہ مصرع نہیں ہے وظیفہ مرا ہے

خمارؔ بارہ بنکوی

آڈیو 9

ایسا نہیں کہ ان سے محبت نہیں رہی

پی پی کے جگمگائے زمانے گزر گئے

تو چاہئے نہ تیری وفا چاہئے مجھے

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

متعلقہ شعرا

"بارہ بنکی" کے مزید شعرا

 

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

بولیے