noImage

مہدی علی خان ذکی لکھنوی

مہدی علی خان ذکی لکھنوی

اشعار 2

اک ذرا تیغ نگہ کو جو اشارا ہو جائے

آپ کا نام ہو اور کام ہمارا ہو جائے

  • شیئر کیجیے

ایک نشتر ہے کہ دیتا ہے رگ جاں کو خراش

ایک کانٹا ہے کہ پہلو میں چبھوتا ہے کوئی

  • شیئر کیجیے