Raza Hamdani's Photo'

رضا ہمدانی

1910 - 1999 | پیشاور, پاکستان

رضا ہمدانی

غزل 17

اشعار 8

بھنور سے لڑو تند لہروں سے الجھو

کہاں تک چلو گے کنارے کنارے

  • شیئر کیجیے

اک بار جو ٹوٹے تو کبھی جڑ نہیں سکتا

آئینہ نہیں دل مگر آئینہ نما ہے

عجب چیز ہے یہ محبت کی بازی

جو ہارے وہ جیتے جو جیتے وہ ہارے

  • شیئر کیجیے

طعنہ دیتے ہو مجھے جینے کا

زندگی میری خطا ہو جیسے

  • شیئر کیجیے

پاس آداب وفا تھا کہ شکستہ پائی

بے خودی میں بھی نہ ہم حد سے گزرنے پائے

  • شیئر کیجیے

کتاب 3

 

"پیشاور" کے مزید شعرا

 

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے