Sahar Ansari's Photo'

سحر انصاری

1939 | کراچی, پاکستان

سحر انصاری

غزل 27

نظم 11

اشعار 16

عجیب ہوتے ہیں آداب رخصت محفل

کہ وہ بھی اٹھ کے گیا جس کا گھر نہ تھا کوئی

  • شیئر کیجیے

ہم کو جنت کی فضا سے بھی زیادہ ہے عزیز

یہی بے رنگ سی دنیا یہی بے مہر سے لوگ

یہ مرنا جینا بھی شاید مجبوری کی دو لہریں ہیں

کچھ سوچ کے مرنا چاہا تھا کچھ سوچ کے جینا چاہا ہے

جسے گزار گئے ہم بڑے ہنر کے ساتھ

وہ زندگی تھی ہماری ہنر نہ تھا کوئی

دلوں کا حال تو یہ ہے کہ ربط ہے نہ گریز

محبتیں تو گئیں تھی عداوتیں بھی گئیں

کتاب 6

 

ویڈیو 36

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر

سحر انصاری

سحر انصاری

سحر انصاری

سحر انصاری

سحر انصاری

سحر انصاری

سحر انصاری

سحر انصاری

سحر انصاری

سحر انصاری

سحر انصاری

Apne khoon se jo hum ek shama jalaye huye hain

Professor Sahar Ansari is an Urdu poet, critic and scholar fo Urudu literature and linguistic from Pakistan. Prof. Sahar Ansari has been awarded Tamgha-e-Imtiyaz by the government of Pakistan. Sahar Ansari reciting his ghazal for Rekhta.org. سحر انصاری

Kaha tak jaya ja sakta hai izhar e mohabbar mein

Professor Sahar Ansari is an Urdu poet, critic and scholar fo Urudu literature and linguistic from Pakistan. Prof. Sahar Ansari has been awarded Tamgha-e-Imtiyaz by the government of Pakistan. Sahar Ansari reciting his ghazal for Rekhta.org. سحر انصاری

Mile hamesha safhe motabar badalte huye

Professor Sahar Ansari is an Urdu poet, critic and scholar fo Urudu literature and linguistic from Pakistan. Prof. Sahar Ansari has been awarded Tamgha-e-Imtiyaz by the government of Pakistan. Sahar Ansari reciting his ghazal for Rekhta.org. سحر انصاری

Sahar Ansari Jashne Kaifi Azmi Mushaira

سحر انصاری

Sahar Ansari on Shabnam Romani - Arts council Karachi May 2010 -10

سحر انصاری

Sahar Ansari tribute to Nazar Amrohvi

سحر انصاری

Yaad thay, yaadgaar thay hum tau (Sahar Ansari talks about Jaun Elia) 2/4

سحر انصاری

Yadgari jalsa in Karachi to remember Urdu poet Qabil Ajmeri held in Apl 2005

سحر انصاری

سحر انصاری

اپنے خوں سے جو ہم اک شمع جلائے ہوئے ہیں

سحر انصاری

اپنے خوں سے جو ہم اک شمع جلائے ہوئے ہیں

سحر انصاری

راستوں میں اک نگر آباد ہے

سحر انصاری

سزا بغیر عدالت سے میں نہیں آیا

سحر انصاری

سزا بغیر عدالت سے میں نہیں آیا

سحر انصاری

سزا بغیر عدالت سے میں نہیں آیا

سحر انصاری

صدا اپنی روش اہل_زمانہ یاد رکھتے ہیں

سحر انصاری

ملی بھی کیا در_دولت سے کار_عشق کی داد

سحر انصاری

وصال_و_ہجر سے وابستہ تہمتیں بھی گئیں

سحر انصاری

کسی بھی زخم کا دل پر اثر نہ تھا کوئی

سحر انصاری

ہم اہل_ظرف کہ غم_خانۂ_ہنر میں رہے

سحر انصاری

ہوس و وفا کی سیاستوں میں بھی کامیاب نہیں رہا

سحر انصاری

متعلقہ شعرا

"کراچی" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے