Sarshar Siddiqui's Photo'

سرشار صدیقی

1926 - 2008 | پاکستان

سرشار صدیقی

غزل 10

اشعار 7

اجڑے ہیں کئی شہر، تو یہ شہر بسا ہے

یہ شہر بھی چھوڑا تو کدھر جاؤ گے لوگو

نیند ٹوٹی ہے تو احساس زیاں بھی جاگا

دھوپ دیوار سے آنگن میں اتر آئی ہے

اک کار محال کر رہا ہوں

زندہ ہوں کمال کر رہا ہوں

میں نے عبادتوں کو محبت بنا دیا

آنکھیں بتوں کے ساتھ رہیں دل خدا کے ساتھ

مری طلب میں تکلف بھی انکسار بھی تھا

وہ نکتہ سنج تھا سب میرے حسب حال دیا

کتاب 5

ابجد

 

1982

اساس

 

1990

بے نام

 

1983

بے نام

 

1983

پتھر کی لکیر

 

1982

 

مزید دیکھیے

متعلقہ شعرا

  • انور خلیل انور خلیل ہم عصر