اشک گلگوں کو نہ خون شہدا کو دیکھا

مرزا مائل دہلوی

اشک گلگوں کو نہ خون شہدا کو دیکھا

مرزا مائل دہلوی

MORE BYمرزا مائل دہلوی

    اشک گلگوں کو نہ خون شہدا کو دیکھا

    شوخ جیسا کہ ترے رنگ حنا کو دیکھا

    تجھ کو دیکھا نہ ترے ناز و ادا کو دیکھا

    تیری ہر طرز میں اک شان خدا کو دیکھا

    ہیں تجھے دیکھ کے حوران بہشتی بیتاب

    یا ترے کشتۂ انداز و ادا کو دیکھا

    تشنۂ آب دم تیغ نے پینا کیسا

    آنکھ اٹھا کر نہ کبھی آب بقا کو دیکھا

    مجھے کافر ہی بتانا ہے یہ واعظ کمبخت

    میں نے بندوں میں کئی بار خدا کو دیکھا

    نکہت زلف معنبر کو چمن میں پایا

    آتے جاتے ترے کوچے میں صبا کو دیکھا

    مائلؔ ایمان ہے بالغیب ہمیں لوگوں کا

    کہ پیمبر کو ہے دیکھا نہ خدا کو دیکھا

    مآخذ :
    • کتاب : Intekhab-e-Sukhan(Jild-2) (Pg. 228)
    • Author : Hasrat Mohani
    • مطبع : uttar pradesh urdu academy (1983)
    • اشاعت : 1983

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY