نہ ہارا ہے عشق اور نہ دنیا تھکی ہے

خمارؔ بارہ بنکوی

نہ ہارا ہے عشق اور نہ دنیا تھکی ہے

خمارؔ بارہ بنکوی

MORE BYخمارؔ بارہ بنکوی

    نہ ہارا ہے عشق اور نہ دنیا تھکی ہے

    دیا جل رہا ہے ہوا چل رہی ہے

    سکوں ہی سکوں ہے خوشی ہی خوشی ہے

    ترا غم سلامت مجھے کیا کمی ہے

    کھٹک گدگدی کا مزا دے رہی ہے

    جسے عشق کہتے ہیں شاید یہی ہے

    وہ موجود ہیں اور ان کی کمی ہے

    محبت بھی تنہائی دائمی ہے

    چراغوں کے بدلے مکاں جل رہے ہیں

    نیا ہے زمانہ نئی روشنی ہے

    ارے او جفاؤں پہ چپ رہنے والو

    خموشی جفاؤں کی تائید بھی ہے

    مرے راہبر مجھ کو گمراہ کر دے

    سنا ہے کہ منزل قریب آ گئی ہے

    خمارؔ بلا نوش تو اور توبہ

    تجھے زاہدوں کی نظر لگ گئی ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    خمارؔ بارہ بنکوی

    خمارؔ بارہ بنکوی

    RECITATIONS

    خمارؔ بارہ بنکوی

    خمارؔ بارہ بنکوی

    خمارؔ بارہ بنکوی

    نہ ہارا ہے عشق اور نہ دنیا تھکی ہے خمارؔ بارہ بنکوی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY