قسم اس آگ اور پانی کی

ثروت حسین

قسم اس آگ اور پانی کی

ثروت حسین

MORE BY ثروت حسین

    قسم اس آگ اور پانی کی

    موت اچھی ہے بس جوانی کی

    اور بھی ہیں روایتیں لیکن

    اک روایت ہے خوں فشانی کی

    جسے انجام تم سمجھتی ہو

    ابتدا ہے کسی کہانی کی

    رنج کی ریت ہے کناروں پر

    موج گزری تھی شادمانی کی

    چوم لیں میری انگلیاں ثروتؔ

    اس نے اتنی تو مہربانی کی

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    قسم اس آگ اور پانی کی نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY