صبح قیامت جن ہونٹوں پہ دلاسے دیکھے

راشد آذر

صبح قیامت جن ہونٹوں پہ دلاسے دیکھے

راشد آذر

MORE BYراشد آذر

    صبح قیامت جن ہونٹوں پہ دلاسے دیکھے

    کیا لب دریا ان جیسے بھی پیاسے دیکھے

    کون وفا کی منزل سے اس شان سے گزرا

    چاک قبا دیکھے جو کوئی بلا سے دیکھے

    ہاتھوں میں میزان لبوں پر حکم قضا ہے

    حاکم شہر بھی اکثر ہم نے خدا سے دیکھے

    دیکھنے والے یوں تو بہت دیکھے ہیں لیکن

    مر جاؤں جو کوئی تیری ادا سے دیکھے

    جن کو زعم تھا بند مژہ کی مضبوطی پر

    ان آنکھوں سے بہتے ہوئے دریا سے دیکھے

    جن ہاتھوں سے بٹتی خیراتیں دیکھی تھیں

    ان آنکھوں سے ان ہاتھوں میں کاسے دیکھے

    اس شہر نا پرساں میں ہم نے تو آزرؔ

    چہرے گلوں سے دیکھے دل صحرا سے دیکھے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    صبح قیامت جن ہونٹوں پہ دلاسے دیکھے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY