aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

تیرا خلوص دل تو محل نظر نہیں

گوپال متل

تیرا خلوص دل تو محل نظر نہیں

گوپال متل

MORE BYگوپال متل

    تیرا خلوص دل تو محل نظر نہیں

    پر کچھ تو ہے جو تیری زباں میں اثر نہیں

    اب وہ نہیں ہے جلوۂ شام و سحر کا رنگ

    تیرا جمال شامل حسن نظر نہیں

    ہے مرکز نگاہ ابھی تک وہ آستاں

    یہ اور بات ہے کہ مجال سفر نہیں

    اڑ بھی چلیں تو اب وہ بہار چمن کہاں

    ہاں ہاں نہیں مجھے ہوس بال و پر نہیں

    ترک تعلقات خود اپنا قصور تھا

    اب کیا گلہ کہ ان کو ہماری خبر نہیں

    چپ چاپ سہ رہے ہیں کہ اپنوں کا جور ہے

    اب خوب جانتے ہیں فغاں کارگر نہیں

    کچھ ہے تو اپنی زود یقینی سے ہے گلہ

    تجھ سے تو اب کلام بھی اے چارہ گر نہیں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق,

    نعمان شوق

    تیرا خلوص دل تو محل نظر نہیں نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے