عمر بھر سینہ میں اک درد دبائے رکھا

عکس سمستی پوری

عمر بھر سینہ میں اک درد دبائے رکھا

عکس سمستی پوری

MORE BYعکس سمستی پوری

    عمر بھر سینہ میں اک درد دبائے رکھا

    ایک بے نام سے رشتہ کو نبھائے رکھا

    تھا مجھے وہم و گماں کہ وہ فقط میری ہے

    اور اس نے بھی بھرم میرا بنائے رکھا

    آندھیاں شرم سے ہو جائیں نہ پانی پانی

    سر یہی سوچ کے پیڑوں نے جھکائے رکھا

    ویسے ہر بات سے رکھا اسے واقف ہم نے

    لیکن افسانۂ الفت کو چھپائے رکھا

    ایک رشتہ جسے میں دے نہ سکا کوئی نام

    ایک رشتہ جسے تا عمر نبھائے رکھا

    کوزہ گر تجھ کو بنانا ہی نہیں تھا جب کچھ

    کس لئے چاک پہ تا عمر چڑھائے رکھا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY