اپنی جنت مجھے دکھلا نہ سکا تو واعظ (ردیف .. ی)

فانی بدایونی

اپنی جنت مجھے دکھلا نہ سکا تو واعظ (ردیف .. ی)

فانی بدایونی

MORE BY فانی بدایونی

    اپنی جنت مجھے دکھلا نہ سکا تو واعظ

    کوچۂ یار میں چل دیکھ لے جنت میری

    ساری دنیا سے انوکھی ہے زمانے سے جدا

    نعمت خاص ہے اللہ رے قسمت میری

    شکوۂ ہجر پہ سر کاٹ کے فرماتے ہیں

    پھر کروگے کبھی اس منہ سے شکایت میری

    تیری قدرت کا نظارہ ہے مرا عجز گناہ

    تیری رحمت کا اشارہ ہے ندامت میری

    لو تبسم بھی شریک نگہ ناز ہوا

    آج کچھ اور بڑھا دی گئی قیمت میری

    فیض یک لمحۂ دیدار سلامت فانیؔ

    غم کہ ہر روز ہے بڑھتی ہوئی دولت میری

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY