دیکھنا قسمت کہ آپ اپنے پہ رشک آ جائے ہے

مرزا غالب

دیکھنا قسمت کہ آپ اپنے پہ رشک آ جائے ہے

مرزا غالب

MORE BYمرزا غالب

    دیکھنا قسمت کہ آپ اپنے پہ رشک آ جائے ہے

    میں اسے دیکھوں بھلا کب مجھ سے دیکھا جائے ہے

    ہاتھ دھو دل سے یہی گرمی گر اندیشے میں ہے

    آبگینہ تندی صہبا سے پگھلا جائے ہے

    غیر کو یا رب وہ کیونکر منع گستاخی کرے

    گر حیا بھی اس کو آتی ہے تو شرما جائے ہے

    شوق کو یہ لت کہ ہر دم نالہ کھینچے جائیے

    دل کی وہ حالت کہ دم لینے سے گھبرا جائے ہے

    دور چشم بد تری بزم طرب سے واہ واہ

    نغمہ ہو جاتا ہے واں گر نالہ میرا جائے ہے

    گرچہ ہے طرز تغافل پردہ دار راز عشق

    پر ہم ایسے کھوے جاتے ہیں کہ وہ پا جائے ہے

    اس کی بزم آرائیاں سن کر دل رنجور یاں

    مثل نقش مدعائے غیر بیٹھا جائے ہے

    ہو کے عاشق وہ پری رخ اور نازک بن گیا

    رنگ کھلتا جاے ہے جتنا کہ اڑتا جائے ہے

    نقش کو اس کے مصور پر بھی کیا کیا ناز ہیں

    کھینچتا ہے جس قدر اتنا ہی کھنچتا جائے ہے

    سایہ میرا مجھ سے مثل دود بھاگے ہے اسدؔ

    پاس مجھ آتش بجاں کے کس سے ٹھہرا جائے ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    طلعت محمود

    طلعت محمود

    ذوالفقار علی بخاری

    ذوالفقار علی بخاری

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY