Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

دل ڈھونڈھتی ہے نگہ کسی کی

ریاضؔ خیرآبادی

دل ڈھونڈھتی ہے نگہ کسی کی

ریاضؔ خیرآبادی

MORE BYریاضؔ خیرآبادی

    دل ڈھونڈھتی ہے نگہ کسی کی

    آئینے کی ہے نہ آرسی کی

    مالک مرے میں نے مے کشی کی

    لیکن یہ خطا کبھی کبھی کی

    کیا شکل ہے وصل میں کسی کی

    تصویر ہیں اپنی بے بسی کی

    کھل جائے صبا کی پاک بازی

    بو پھوٹے جو باغ میں کلی کی

    کم بخت کبھی نہ خوش ہوا تو

    اے غم تری ہر طرح خوشی کی

    منہ ہم نے ہنسی ہنسی میں چوما

    جو ہو گئی بات تھی ہنسی کی

    تانا سا تنا ہے میکدے میں

    پگڑی اچھلی ہے شیخ جی کی

    ہم کو جو دیا تو اور کا دل

    دل لے کے یہ اچھی دل لگی کی

    یوں بھی تو چلا نہ کام اپنا

    دشمن سے بھی ہم نے دوستی کی

    پائے گئے جس میں دل کے اجزا

    ہوگی وہ خاک اسی گلی کی

    ایسی ہے کہ پی سکے گا واعظ

    ہے تازہ کشید آج ہی کی

    مے خلد میں ہوگی صورت حور

    میخانے میں شکل ہے پری کی

    گھر ہے نہ کہیں نشاں لحد کا

    مٹی ہے خراب بے کسی کی

    سچ یہ ہے کہ زندگی ہو یا موت

    ہر چیز بری ہے مفلسی کی

    اچھی ہے گزک سے، تلخ مے سے

    ملتی رہے روز روکھی‌ پھیکی

    کچھ کچھ ہے ریاضؔ میرؔ کا رنگ

    کچھ شان ہے ہم میں مصحفیؔ کی

    مأخذ :
    ગુજરાતી ભાષા-સાહિત્યનો મંચ : રેખ્તા ગુજરાતી

    ગુજરાતી ભાષા-સાહિત્યનો મંચ : રેખ્તા ગુજરાતી

    મધ્યકાલથી લઈ સાંપ્રત સમય સુધીની ચૂંટેલી કવિતાનો ખજાનો હવે છે માત્ર એક ક્લિક પર. સાથે સાથે સાહિત્યિક વીડિયો અને શબ્દકોશની સગવડ પણ છે. સંતસાહિત્ય, ડાયસ્પોરા સાહિત્ય, પ્રતિબદ્ધ સાહિત્ય અને ગુજરાતના અનેક ઐતિહાસિક પુસ્તકાલયોના દુર્લભ પુસ્તકો પણ તમે રેખ્તા ગુજરાતી પર વાંચી શકશો

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے