دنیا کا یہ اعزاز یہ انعام بہت ہے

مظہر امام

دنیا کا یہ اعزاز یہ انعام بہت ہے

مظہر امام

MORE BYمظہر امام

    دنیا کا یہ اعزاز یہ انعام بہت ہے

    مجھ پر ترے اکرام کا الزام بہت ہے

    اس عمر میں یہ موڑ اچانک یہ ملاقات

    خوش گام ابھی گردش ایام بہت ہے

    بجھتی ہوئی صبحیں ہوں کہ جلتی ہوئی راتیں

    تجھ سے یہ ملاقات سر شام بہت ہے

    میں مرحمت خاص کا خواہاں بھی نہیں ہوں

    میرے لیے تیری نگہ عام بہت ہے

    کم یاب کیا ہے اسے بازار طلب نے

    ہم تھے تو وہ ارزاں تھا پر اب دام بہت ہے

    اس گھر کی بدولت مرے شعروں کو ہے شہرت

    وہ گھر کہ جو اس شہر میں بد نام بہت ہے

    مأخذ :
    • کتاب : paalkii kahkashaa.n (Pg. 103)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY