غم مجھے حسرت مجھے وحشت مجھے سودا مجھے

سیماب اکبرآبادی

غم مجھے حسرت مجھے وحشت مجھے سودا مجھے

سیماب اکبرآبادی

MORE BYسیماب اکبرآبادی

    غم مجھے حسرت مجھے وحشت مجھے سودا مجھے

    ایک دل دے کر خدا نے دے دیا کیا کیا مجھے

    ہے حصول آرزو کا راز ترک آرزو

    میں نے دنیا چھوڑ دی تو مل گئی دنیا مجھے

    یہ نماز عشق ہے کیسا ادب کس کا ادب

    اپنے پائے ناز پر کرنے بھی دے سجدا مجھے

    کہہ کے سویا ہوں یہ اپنے اضطراب شوق سے

    جب وہ آئیں قبر پر فوراً جگا دینا مجھے

    صبح تک کیا کیا تری امید نے طعنے دیے

    آ گیا تھا شام غم اک نیند کا جھوکا مجھے

    دیکھتے ہی دیکھتے دنیا سے میں اٹھ جاؤں گا

    دیکھتی کی دیکھتی رہ جائے گی دنیا مجھے

    جلوہ گر ہے اس میں اے سیمابؔ اک دنیائے حسن

    جام جم سے ہے زیادہ دل کا آئینہ مجھے

    مآخذ
    • کتاب : Intekhab-e-Sukhan(Jild-2) (Pg. 257)
    • Author : Hasrat Mohani
    • مطبع : uttar pradesh urdu academy (1983)
    • اشاعت : 1983

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY