اس درجہ عشق موجب رسوائی بن گیا

ساغر صدیقی

اس درجہ عشق موجب رسوائی بن گیا

ساغر صدیقی

MORE BYساغر صدیقی

    اس درجہ عشق موجب رسوائی بن گیا

    میں آپ اپنے گھر کا تماشائی بن گیا

    دیر و حرم کی راہ سے دل بچ گیا مگر

    تیری گلی کے موڑ پہ سودائی بن گیا

    بزم وفا میں آپ سے اک پل کا سامنا

    یاد آ گیا تو عہد شناسائی بن گیا

    بے ساختہ بکھر گئی جلووں کی کائنات

    آئینہ ٹوٹ کر تری انگڑائی بن گیا

    دیکھی جو رقص کرتی ہوئی موج زندگی

    میرا خیال وقت کی شہنائی بن گیا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY