عشق مجھ کو نہیں وحشت ہی سہی

مرزا غالب

عشق مجھ کو نہیں وحشت ہی سہی

مرزا غالب

MORE BY مرزا غالب

    INTERESTING FACT

    Film: Mirza Ghalib (1954)

    عشق مجھ کو نہیں وحشت ہی سہی

    میری وحشت تری شہرت ہی سہی

    قطع کیجے نہ تعلق ہم سے

    کچھ نہیں ہے تو عداوت ہی سہی

    میرے ہونے میں ہے کیا رسوائی

    اے وہ مجلس نہیں خلوت ہی سہی

    ہم بھی دشمن تو نہیں ہیں اپنے

    غیر کو تجھ سے محبت ہی سہی

    اپنی ہستی ہی سے ہو جو کچھ ہو

    آگہی گر نہیں غفلت ہی سہی

    عمر ہرچند کہ ہے برق خرام

    دل کے خوں کرنے کی فرصت ہی سہی

    ہم کوئی ترک وفا کرتے ہیں

    نہ سہی عشق مصیبت ہی سہی

    کچھ تو دے اے فلک ناانصاف

    آہ و فریاد کی رخصت ہی سہی

    ہم بھی تسلیم کی خو ڈالیں گے

    بے نیازی تری عادت ہی سہی

    یار سے چھیڑ چلی جائے اسدؔ

    گر نہیں وصل تو حسرت ہی سہی

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    کندن لال سہگل

    کندن لال سہگل

    چترا سنگھ

    چترا سنگھ

    طلعت محمود

    طلعت محمود

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    عشق مجھ کو نہیں وحشت ہی سہی نعمان شوق

    Tagged Under

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY