جب تک اپنے دل میں ان کا غم رہا

احسن مارہروی

جب تک اپنے دل میں ان کا غم رہا

احسن مارہروی

MORE BYاحسن مارہروی

    جب تک اپنے دل میں ان کا غم رہا

    حسرتوں کا رات دن ماتم رہا

    ہجر میں دل کا نہ تھا ساتھی کوئی

    درد اٹھ اٹھ کر شریک غم رہا

    کر کے دفن اپنے پرائے چل دیے

    بیکسی کا قبر پر ماتم رہا

    سیکڑوں سر تن سے کر ڈالے جدا

    ان کے خنجر کا وہی دم خم رہا

    آج اک شور قیامت تھا بپا

    تیرے کشتو کا عجب عالم رہا

    حسرتیں مل مل کے روتیں یاس سے

    یوں دل مرحوم کا ماتم رہا

    لے گیا تا کوئے یار احسنؔ وہی

    مدعی کب دوستوں سے کم رہا

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    جب تک اپنے دل میں ان کا غم رہا نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY