جو عکس یار تہہ آب دیکھ سکتے ہیں

اسعد بدایونی

جو عکس یار تہہ آب دیکھ سکتے ہیں

اسعد بدایونی

MORE BY اسعد بدایونی

    جو عکس یار تہہ آب دیکھ سکتے ہیں

    عجیب لوگ ہیں کیا خواب دیکھ سکتے ہیں

    سمندروں کے سفر سب کی قسمتوں میں کہاں

    سو ہم کنارے سے گرداب دیکھ سکتے ہیں

    گزرنے والے جہازوں سے رسم و راہ نہیں

    بس ان کے عکس سر آب دیکھ سکتے ہیں

    ہوا کے اپنے علاقے ہوس کے اپنے مقام

    یہ کب کسی کو ظفر یاب دیکھ سکتے ہیں

    خفا ہیں عاشق و معشوق سے مگر کچھ لوگ

    غزل میں عشق کے آداب دیکھ سکتے ہیں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    جو عکس یار تہہ آب دیکھ سکتے ہیں نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY