جاؤ قرار بے دلاں شام بخیر شب بخیر

جون ایلیا

جاؤ قرار بے دلاں شام بخیر شب بخیر

جون ایلیا

MORE BYجون ایلیا

    دلچسپ معلومات

    سابقہ بیوی زاہدہ حنا کے نام

    جاؤ قرار بے دلاں شام بخیر شب بخیر

    صحن ہوا دھواں دھواں شام بخیر شب بخیر

    شام وصال ہے قریب صبح کمال ہے قریب

    پھر نہ رہیں گے سرگراں شام بخیر شب بخیر

    وجد کرے گی زندگی جسم بہ جسم جاں بہ جاں

    جسم بہ جسم جاں بہ جاں شام بخیر شب بخیر

    اے مرے شوق کی امنگ میرے شباب کی ترنگ

    تجھ پہ شفق کا سائباں شام بخیر شب بخیر

    تو مری شاعری میں ہے رنگ طراز و گل فشاں

    تیری بہار بے خزاں شام بخیر شب بخیر

    تیرا خیال خواب خواب خلوت جاں کی آب و تاب

    جسم جمیل و نوجواں شام بخیر شب بخیر

    ہے مرا نام ارجمند تیرا حصار سر بلند

    بانو شہر جسم و جاں شام بخیر شب بخیر

    دید سے جان دید تک دل سے رخ امید تک

    کوئی نہیں ہے درمیاں شام بخیر شب بخیر

    ہو گئی دیر جاؤ تم مجھ کو گلے لگاؤ تم

    تو مری جاں ہے میری جاں شام بخیر شب بخیر

    شام بخیر شب بخیر موج شمیم پیرہن

    تیری مہک رہے گی یاں شام بخیر شب بخیر

    مأخذ :
    • کتاب : shaayed (Pg. 144)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY