کی ہے کوئی حسین خطا ہر خطا کے ساتھ

کیفی اعظمی

کی ہے کوئی حسین خطا ہر خطا کے ساتھ

کیفی اعظمی

MORE BY کیفی اعظمی

    کی ہے کوئی حسین خطا ہر خطا کے ساتھ

    تھوڑا سا پیار بھی مجھے دے دو سزا کے ساتھ

    گر ڈوبنا ہی اپنا مقدر ہے تو سنو

    ڈوبیں گے ہم ضرور مگر ناخدا کے ساتھ

    منزل سے وہ بھی دور تھا اور ہم بھی دور تھے

    ہم نے بھی دھول اڑائی بہت رہ نما کے ساتھ

    رقص صبا کے جشن میں ہم تم بھی ناچتے

    اے کاش تم بھی آ گئے ہوتے صبا کے ساتھ

    اکیسویں صدی کی طرف ہم چلے تو ہیں

    فتنے بھی جاگ اٹھے ہیں آواز پا کے ساتھ

    ایسا لگا غریبی کی ریکھا سے ہوں بلند

    پوچھا کسی نے حال کچھ ایسی ادا کے ساتھ

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    بھارتھی وشواناتھن

    بھارتھی وشواناتھن

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    کی ہے کوئی حسین خطا ہر خطا کے ساتھ نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY