کس نے صدا دی کون آیا ہے

آزاد گلاٹی

کس نے صدا دی کون آیا ہے

آزاد گلاٹی

MORE BYآزاد گلاٹی

    کس نے صدا دی کون آیا ہے

    اے دل تو کیوں یوں چونکا ہے

    آپ سے مل کر یوں لگتا ہے

    ایک حسیں سپنا دیکھا ہے

    آنکھیں نیند سے کیوں ہیں بوجھل

    غم کا نشہ کچھ ٹوٹ رہا ہے

    دور نگر کے رہنے والو

    کون کسی کے پاس رہا ہے

    سب کو ہے اپنا اپنا غم

    کس نے کس کا غم سمجھا ہے

    یادوں کی محفل میں کھو کر

    دل اپنا تنہا تنہا ہے

    ہستی کے سنسان سفر میں

    کس نے کس کا ساتھ دیا ہے

    آنکھیں کھول کے دیکھنے والو

    ہستی اک سندر سپنا ہے

    مآخذ:

    • کتاب : Dasht-e-Sada (Pg. 103)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY