مری زندگی پہ نہ مسکرا مجھے زندگی کا الم نہیں

شکیل بدایونی

مری زندگی پہ نہ مسکرا مجھے زندگی کا الم نہیں

شکیل بدایونی

MORE BYشکیل بدایونی

    مری زندگی پہ نہ مسکرا مجھے زندگی کا الم نہیں

    جسے تیرے غم سے ہو واسطہ وہ خزاں بہار سے کم نہیں

    مرا کفر حاصل زہد ہے مرا زہد حاصل کفر ہے

    مری بندگی وہ ہے بندگی جو رہین دیر و حرم نہیں

    مجھے راس آئیں خدا کرے یہی اشتباہ کی ساعتیں

    انہیں اعتبار وفا تو ہے مجھے اعتبار ستم نہیں

    وہی کارواں وہی راستے وہی زندگی وہی مرحلے

    مگر اپنے اپنے مقام پر کبھی تم نہیں کبھی ہم نہیں

    نہ وہ شان جبر شباب ہے نہ وہ رنگ قہر عتاب ہے

    دل بے قرار پہ ان دنوں ہے ستم یہی کہ ستم نہیں

    نہ فنا مری نہ بقا مری مجھے اے شکیلؔ نہ ڈھونڈھئے

    میں کسی کا حسن خیال ہوں مرا کچھ وجود و عدم نہیں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    مری زندگی پہ نہ مسکرا مجھے زندگی کا الم نہیں نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY