aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

او دل توڑ کے جانے والے دل کی بات بتاتا جا

حفیظ جالندھری

او دل توڑ کے جانے والے دل کی بات بتاتا جا

حفیظ جالندھری

MORE BYحفیظ جالندھری

    او دل توڑ کے جانے والے دل کی بات بتاتا جا

    اب میں دل کو کیا سمجھاؤں مجھ کو بھی سمجھاتا جا

    ہاں میرے مجروح تبسم خشک لبوں تک آتا جا

    پھول کی ہست و بود یہی ہے کھلتا جا مرجھاتا جا

    میری چپ رہنے کی عادت جس کارن بد نام ہوئی

    اب وہ حکایت عام ہوئی ہے سنتا جا شرماتا جا

    یہ دکھ درد کی برکھا بندے دین ہے تیرے داتا کی

    شکر نعمت بھی کرتا جا دامن بھی پھیلاتا جا

    جینے کا ارمان کروں یا مرنے کا سامان کروں

    عشق میں کیا ہوتا ہے ناصح عقل کی بات سجھاتا جا

    تجھ کو ابرآلود دنوں سے کام نہ چاندنی راتوں سے

    بہلاتا ہے باتوں سے بہلاتا جا بہلاتا جا

    دونوں سنگ راہ طلب ہیں راہنما بھی منزل بھی

    ذوق طلب ہر ایک قدم پر دونوں کو ٹھکراتا جا

    نغمے سے جب پھول کھلیں گے چننے والے چن لیں گے

    سننے والے سن لیں گے تو اپنی دھن میں گاتا جا

    آخر تجھ کو بھی موت آئی خیر حفیظؔ خدا حافظ

    لیکن مرتے مرتے پیارے وجہ مرگ بتاتا جا

    مأخذ:

    Kulliyat-e-Hafeez Jalandhari (Pg. 434)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے