سو خلوص باتوں میں سب کرم خیالوں میں

بشیر بدر

سو خلوص باتوں میں سب کرم خیالوں میں

بشیر بدر

MORE BYبشیر بدر

    سو خلوص باتوں میں سب کرم خیالوں میں

    بس ذرا وفا کم ہے تیرے شہر والوں میں

    پہلی بار نظروں نے چاند بولتے دیکھا

    ہم جواب کیا دیتے کھو گئے سوالوں میں

    رات تیری یادوں نے دل کو اس طرح چھیڑا

    جیسے کوئی چٹکی لے نرم نرم گالوں میں

    یوں کسی کی آنکھوں میں صبح تک ابھی تھے ہم

    جس طرح رہے شبنم پھول کے پیالوں میں

    میری آنکھ کے تارے اب نہ دیکھ پاؤ گے

    رات کے مسافر تھے کھو گئے اجالوں میں

    جیسے آدھی شب کے بعد چاند نیند میں چونکے

    وہ گلاب کی جنبش ان سیاہ بالوں میں

    موضوعات :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY