سو رنگ ہے کس رنگ سے تصویر بناؤں

اطہر نفیس

سو رنگ ہے کس رنگ سے تصویر بناؤں

اطہر نفیس

MORE BY اطہر نفیس

    سو رنگ ہے کس رنگ سے تصویر بناؤں

    میرے تو کئی روپ ہیں کس روپ میں آؤں

    کیوں آ کے ہر اک شخص مرے زخم کریدے

    کیوں میں بھی ہر اک شخص کو حال اپنا سناؤں

    کیوں لوگ مصر ہیں کہ سنیں میری کہانی

    یہ حق مجھے حاصل ہے سناؤں کہ چھپاؤں

    اس بزم میں اپنا تو شناسا نہیں کوئی

    کیا کرب ہے تنہائی کا میں کس کو بتاؤں

    کچھ اور تو حاصل نہ ہوا خوابوں سے مجھ کو

    بس یہ ہے کہ یادوں کے در و بام سجاؤں

    بے قیمت و بے مایہ اسی خاک میں یارو

    وہ خاک بھی ہوگی جسے آنکھوں سے لگاؤں

    کرنوں کی رفاقت کبھی آئے جو میسر

    ہمراہ میں ان کے تری دہلیز پہ آؤں

    خوابوں کے افق پر ترا چہرہ ہو ہمیشہ

    اور میں اسی چہرے سے نئے خواب سجاؤں

    رہ جائیں کسی طور میرے خواب سلامت

    اس ایک دعا کے لیے اب ہاتھ اٹھاؤں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    سو رنگ ہے کس رنگ سے تصویر بناؤں نعمان شوق

    Tagged Under

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY