ٹھہری ٹھہری سی طبیعت میں روانی آئی

اقبال اشہر

ٹھہری ٹھہری سی طبیعت میں روانی آئی

اقبال اشہر

MORE BY اقبال اشہر

    ٹھہری ٹھہری سی طبیعت میں روانی آئی

    آج پھر یاد محبت کی کہانی آئی

    آج پھر نیند کو آنکھوں سے بچھڑتے دیکھا

    آج پھر یاد کوئی چوٹ پرانی آئی

    مدتوں بعد چلا ان پہ ہمارا جادو

    مدتوں بعد ہمیں بات بنانی آئی

    مدتوں بعد پشیماں ہوا دریا ہم سے

    مدتوں بعد ہمیں پیاس چھپانی آئی

    مدتوں بعد کھلی وسعت صحرا ہم پر

    مدتوں بعد ہمیں خاک اڑانی آئی

    مدتوں بعد میسر ہوا ماں کا آنچل

    مدتوں بعد ہمیں نیند سہانی آئی

    اتنی آسانی سے ملتی نہیں فن کی دولت

    ڈھل گئی عمر تو غزلوں پہ جوانی آئی

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    اقبال اشہر

    اقبال اشہر

    اقبال اشہر

    اقبال اشہر

    توصیف اختر

    توصیف اختر

    اقبال اشہر

    اقبال اشہر

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY