یہی جستجو کا کمال ہے یہی آگہی کی تلاش ہے

متین نیازی

یہی جستجو کا کمال ہے یہی آگہی کی تلاش ہے

متین نیازی

MORE BY متین نیازی

    یہی جستجو کا کمال ہے یہی آگہی کی تلاش ہے

    اسے سمجھو اپنی تلاش تم جو تمہیں کسی کی تلاش ہے

    یہی آئنہ ہے وہ آئینہ جو لئے ہے جلوۂ آگہی

    یہ جو شاعری کا شعور ہے یہ پیمبری کی تلاش ہے

    وہ مسرتوں کا ہجوم کیا جو طواف عشق و طرب کرے

    وہ خوشی جو اوروں کو دے سکوں مجھے اس خوشی کی تلاش ہے

    یہ جو پستیاں ہیں عروج کی یہ تباہیاں جو ہیں ذہن کی

    کوئی راہ بر ہے تو آئے پھر انہیں راہبری کی تلاش ہے

    مری زندگی مری شاعری ہے حقیقتوں کا اک آئینہ

    یہ متینؔ غم جو عزیز ہے یہ مری کبھی کی تلاش ہے

    مآخذ:

    • کتاب : Fikr-e-mateen (Pg. 135)
    • Author : Dr. Mateen Niyazi
    • مطبع : Dr. Mateen Niyazi (1986)
    • اشاعت : 1986

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY