یہ کہنا تھا جو دنیا کہہ رہی ہے

حمیرا راحتؔ

یہ کہنا تھا جو دنیا کہہ رہی ہے

حمیرا راحتؔ

MORE BYحمیرا راحتؔ

    یہ کہنا تھا جو دنیا کہہ رہی ہے

    یہ گنگا کب سے الٹی بہہ رہی ہے

    خبر ہے خواب ٹوٹے گا یقیناً

    مگر اک فاختہ دکھ سہہ رہی ہے

    لگی تھی اس کی بنیادوں میں دیمک

    سو اب دل کی عمارت ڈھ رہی ہے

    کہیں یہ خشک ہو جائے نہ ساتھی

    مرے دل میں جو ندیا بہہ رہی ہے

    ستارہ بند مٹھی میں ملے گا

    مری تقدیر مجھ سے کہہ رہی ہے

    مرے دل کے اکیلے گھر میں راحتؔ

    اداسی جانے کب سے رہ رہی ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY