بس ایک اندازہ

جون ایلیا

بس ایک اندازہ

جون ایلیا

MORE BYجون ایلیا

    برس گزرے تمہیں سوئے ہوئے

    اٹھ جاؤ سنتی ہو اب اٹھ جاؤ

    میں آیا ہوں

    میں اندازے سے سمجھا ہوں

    یہاں سوئی ہوئی ہو تم

    یہاں روئے زمیں کے اس مقام آسمانی تر کی حد میں

    باد ہائے تند نے

    میرے لیے بس ایک اندازہ ہی چھوڑا ہے!

    مآخذ :
    • کتاب : shayad (Pg. 62)
    • Author : jaun eliya
    • مطبع : kitabi duniya (2008)
    • اشاعت : 2008

    موضوعات:

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY