noImage

عارف جلالی

1928

اشعار 2

خود اپنی مستی ہے جس نے مچائی ہے ہلچل

نشہ شراب میں ہوتا تو ناچتی بوتل

  • شیئر کیجیے

وہاں خاک عہد وفا نبھے وہاں خاک دل کا کنول کھلے

جہاں زندگی کی ضرورتوں کا بھی حسرتوں میں شمار ہے

  • شیئر کیجیے