Asghar Velori's Photo'

اصغر ویلوری

1931 | چنئی, ہندوستان

اصغر ویلوری

غزل 6

اشعار 13

شکار اپنی انا کا ہے آج کا انساں

جسے بھی دیکھیے تنہا دکھائی دیتا ہے

  • شیئر کیجیے

روشنی جب سے مجھے چھوڑ گئی

شمع روتی ہے سرہانے میرے

  • شیئر کیجیے

دنیا سے ختم ہو گیا انسان کا وجود

رہنا پڑا ہے ہم کو درندوں کے درمیاں

  • شیئر کیجیے

لوگ اچھوں کو بھی کس دل سے برا کہتے ہیں

ہم کو کہنے میں بروں کو بھی برا لگتا ہے

  • شیئر کیجیے

ترے محل میں ہزاروں چراغ جلتے ہیں

یہ میرا گھر ہے یہاں دل کے داغ جلتے ہیں

  • شیئر کیجیے

کتاب 7

اصغر شناسی

اصغر ویلوی : فکروفن

2016

اصغر ویلوی : منفرد رباعی گو

 

2005

اصغر ویلوری کی غزلیہ شاعری

 

2008

حروف

 

1992

رقص قلم

 

2006

سنگ ریزے

 

2010

طرز بیان

 

2009

 

"چنئی" کے مزید شعرا

  • نعمان انور نعمان انور