Azad Gulati's Photo'

آزاد گلاٹی

1935 -

غزل 30

اشعار 25

دشت ظلمات میں ہمراہ مرے

کوئی تو ہے جو جلا ہے مجھ میں

سمیٹ لاتا ہوں موتی تمہاری یادوں کے

جو خلوتوں کے سمندر میں ڈوبتا ہوں میں

کسے ملتی نجات آزادؔ ہستی کے مسائل سے

کہ ہر کوئی مقید آب و گل کے سلسلوں کا تھا

ای- کتاب 7

آب سراب

 

1992

آغوش خیال

 

1964

آغوش خیال

 

1935

اذکار

 

1987

دشت صدا

 

1976

جسموں کا بن باس

 

 

تکون کا کرب

 

1973

 

Added to your favorites

Removed from your favorites