Fuzail Jafri's Photo'

فضیل جعفری

1936 - 2018 | ممبئی, ہندوستان

ممتاز جدید نقاد

ممتاز جدید نقاد

غزل 34

اشعار 23

زہر میٹھا ہو تو پینے میں مزا آتا ہے

بات سچ کہیے مگر یوں کہ حقیقت نہ لگے

بوسے بیوی کے ہنسی بچوں کی آنکھیں ماں کی

قید خانے میں گرفتار سمجھئے ہم کو

بھولے بسرے ہوئے غم پھر ابھر آتے ہیں کئی

آئینہ دیکھیں تو چہرے نظر آتے ہیں کئی

دشت تنہائی میں جینے کا سلیقہ سیکھئے

یہ شکستہ بام و در بھی ہم سفر ہو جائیں گے

چمکتے چاند سے چہروں کے منظر سے نکل آئے

خدا حافظ کہا بوسہ لیا گھر سے نکل آئے

کتاب 8

افسوس حاصل کا

 

2009

چٹان اور پانی

 

1974

کمان اور زخم

 

1986

رنگ شکستہ

 

1980

صحرا میں لفظ

 

1994

اظہار

شمارہ نمبر-001

1975

شمارہ نمبر۔002

1975

شمارہ نمبر۔001

1975

 

متعلقہ شعرا

  • گوپی چند نارنگ گوپی چند نارنگ ہم عصر

"ممبئی" کے مزید شعرا

  • شکیل بدایونی شکیل بدایونی
  • گلزار گلزار
  • اختر الایمان اختر الایمان
  • ندا فاضلی ندا فاضلی
  • علی سردار جعفری علی سردار جعفری
  • کیفی اعظمی کیفی اعظمی
  • ذاکر خان ذاکر ذاکر خان ذاکر
  • نوین جوشی نوین جوشی
  • سوپنل تیواری سوپنل تیواری
  • راجیش ریڈی راجیش ریڈی