noImage

حسن نجمی سکندرپوری

1913 - 1989

حسن نجمی سکندرپوری

غزل 8

اشعار 4

ہم کو اس کی کیا خبر گلشن کا گلشن جل گیا

ہم تو اپنا صرف اپنا آشیاں دیکھا کیے

شہر کی بھیڑ میں شامل ہے اکیلا پن بھی

آج ہر ذہن ہے تنہائی کا مارا دیکھو

مانگو سمندروں سے نہ ساحل کی بھیک تم

ہاں فکر و فن کے واسطے گہرائی مانگ لو

موسم کا ظلم سہتے ہیں کس خامشی کے ساتھ

تم پتھروں سے طرز شکیبائی مانگ لو

کتاب 2

کسک

 

1987

شب چراغ

 

1982