aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر
Hosh Tirmizi's Photo'

ہوش ترمذی

ہوش ترمذی

غزل 11

اشعار 6

دل کو غم راس ہے یوں گل کو صبا ہو جیسے

اب تو یہ درد کی صورت ہی دوا ہو جیسے

دشت وفا میں جل کے نہ رہ جائیں اپنے دل

وہ دھوپ ہے کہ رنگ ہیں کالے پڑے ہوئے

ملنے کو ہے خموشئ اہل جنوں کی داد

اٹھنے کو ہے زمیں سے دھواں دیکھتے رہو

تزئین بزم غم کے لیے کوئی شے تو ہو

روشن چراغ دل نہ سہی جام مے تو ہو

اب تو دیوانوں سے یوں بچ کے گزر جاتی ہے

بوئے گل بھی ترے دامن کی ہوا ہو جیسے

Recitation

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
بولیے