Jameel Malik's Photo'

جمیل ملک

1928 - 2001 | راول پنڈی, پاکستان

غزل 29

اشعار 16

ہم سے کوئی تعلق خاطر تو ہے اسے

وہ یار با وفا نہ سہی بے وفا تو ہے

ہم تو تمام عمر تری ہی ادا رہے

یہ کیا ہوا کہ پھر بھی ہمیں بے وفا رہے

دل کی قیمت تو محبت کے سوا کچھ بھی نہ تھی

جو ملے صورت زیبا کے خریدار ملے

ختم ہو جائیں جنہیں دیکھ کے بیماری دل

ڈھونڈ کر لائیں کہاں سے وہ مسیحا چہرے

میں تو تنہا تھا مگر تجھ کو بھی تنہا دیکھا

اپنی تصویر کے پیچھے ترا چہرا دیکھا

کتاب 1

پس آئینہ

 

1984

 

مزید دیکھیے

"راول پنڈی" کے مزید شعرا

  • اختر ہوشیارپوری اختر ہوشیارپوری
  • صابر ظفر صابر ظفر
  • جلیل عالیؔ جلیل عالیؔ
  • باقی صدیقی باقی صدیقی
  • شمامہ افق شمامہ افق
  • پروین فنا سید پروین فنا سید
  • حسن عباس رضا حسن عباس رضا
  • افضل منہاس افضل منہاس
  • نوید فدا ستی نوید فدا ستی
  • مصطفیٰ راہی مصطفیٰ راہی