noImage

خواجہ حسن حسنؔ

اشعار 4

امنڈ کے آنکھ سے اک بار بہہ چلے آنسو

ہنسی ہنسی میں جو ذکر وداع یار آیا

  • شیئر کیجیے

رہی بے قراری اسیری کی یوں ہی

تو صیاد ٹکڑے ترا دام ہوگا

  • شیئر کیجیے

وہ جب تک کہ زلفیں سنوارا کیا

کھڑا اس پہ میں جان وارا کیا

  • شیئر کیجیے

Added to your favorites

Removed from your favorites