Krishn Adeeb's Photo'

کرشن ادیب

1915 - 1999

غزل 7

اشعار 3

شو کیس میں رکھا ہوا عورت کا جو بت ہے

گونگا ہی سہی پھر بھی دل آویز بہت ہے

دھیما دھیما درد سہانا ہم کو اچھا لگتا تھا

دکھتے جی کو اور دکھانا ہم کو اچھا لگتا تھا

پشت پر قاتل کا خنجر سامنے اندھا کنواں

بچ کے جاؤں کس طرف اب راستہ کوئی نہیں

  • شیئر کیجیے