noImage

ممنونؔ نظام الدین

? - 1844 | دلی, انڈیا

ممنونؔ نظام الدین

غزل 14

اشعار 8

کل وصل میں بھی نیند نہ آئی تمام شب

ایک ایک بات پر تھی لڑائی تمام شب

یہ نہ جانے تھے کہ اس محفل میں دل رہ جائے گا

ہم یہ سمجھے تھے چلے آئیں گے دم بھر دیکھ کر

  • شیئر کیجیے

خواب میں بوسہ لیا تھا رات بلب نازکی

صبح دم دیکھا تو اس کے ہونٹھ پہ بتخالہ تھا

کوئی ہمدرد نہ ہمدم نہ یگانہ اپنا

روبرو کس کے کہیں ہم یہ فسانا اپنا

گماں نہ کیونکہ کروں تجھ پہ دل چرانے کا

جھکا کے آنکھ سبب کیا ہے مسکرانے کا

کتاب 5

 

آڈیو 10

تجھے نقش_ہستی مٹایا تو دیکھا

تجھے کچھ یاد ہے پہلا وہ عالم عشق_پنہاں کا

جو بعد_مرگ بھی دل کو رہی کنار میں جا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

"دلی" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے