Nazeer Qaisar's Photo'

نذیر قیصر

1945 | لاہور, پاکستان

نذیر قیصر

غزل 34

اشعار 18

برس رہی تھی بارش باہر

اور وہ بھیگ رہا تھا مجھ میں

یوں تجھے دیکھ کے چونک اٹھتی ہیں سوئی یادیں

جیسے سناٹے میں آواز لگا دے کوئی

کوئی مجھ کو ڈھونڈھنے والا

بھول گیا ہے رستہ مجھ میں

بکھرتا جاتا ہے کمرے میں سگرٹوں کا دھواں

پڑا ہے خواب کوئی چائے کی پیالی میں

بچے نے تتلی پکڑ کر چھوڑ دی

آج مجھ کو بھی خدا اچھا لگا

کتاب 2

 

"لاہور" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے