Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر
Qateel Shifai's Photo'

قتیل شفائی

1919 - 2001 | لاہور, پاکستان

مقبول ترین شاعروں میں شامل۔ ممتاز فلم نغمہ نگار۔ اپنی غزل ’گرمیٔ حسرت ناکام سے جل جاتے ہیں‘ کے لئے مشہور

مقبول ترین شاعروں میں شامل۔ ممتاز فلم نغمہ نگار۔ اپنی غزل ’گرمیٔ حسرت ناکام سے جل جاتے ہیں‘ کے لئے مشہور

قتیل شفائی کے ویڈیو

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر

قتیل شفائی

قتیل شفائی

Qatiil Shifai reading in a mushaira

Qatiil Shifai reading in a mushaira قتیل شفائی

Qatil shifaii at mushaira

قتیل شفائی

آؤ کوئی تفریح کا سامان کیا جائے

قتیل شفائی

انگڑائی پر انگڑائی لیتی ہے رات جدائی کی

قتیل شفائی

رقص کرنے کا ملا حکم جو دریاؤں میں

قتیل شفائی

یہ معجزہ بھی محبت کبھی دکھائے مجھے

قتیل شفائی

ویڈیو کا زمرہ
دیگر

امانت علی خان

مہدی حسن

اپنے ہاتھوں کی لکیروں میں سجا لے مجھ کو

اپنے ہاتھوں کی لکیروں میں سجا لے مجھ کو مسعود تنہا

اس ادا سے بھی ہوں میں آشنا تجھے اتنا جس پہ غرور ہے

اس ادا سے بھی ہوں میں آشنا تجھے اتنا جس پہ غرور ہے اعجاز حسین حضروی

الفت کی نئی منزل کو چلا تو بانہیں ڈال کے بانہوں میں

الفت کی نئی منزل کو چلا تو بانہیں ڈال کے بانہوں میں اقبال بانو

حالات کے قدموں پہ قلندر نہیں گرتا

حالات کے قدموں پہ قلندر نہیں گرتا مسعود تنہا

دل کو غم_حیات گوارا ہے ان دنوں

دل کو غم_حیات گوارا ہے ان دنوں پرتبھا بگھیل

صدمہ تو ہے مجھے بھی کہ تجھ سے جدا ہوں میں

صدمہ تو ہے مجھے بھی کہ تجھ سے جدا ہوں میں مسعود تنہا

قتیل شفائی

قتیل شفائی توصیف اختر

گرمیٔ_حسرت_ناکام سے جل جاتے ہیں

گرمیٔ_حسرت_ناکام سے جل جاتے ہیں مہدی حسن

یارو کسی قاتل سے کبھی پیار نہ مانگو

یارو کسی قاتل سے کبھی پیار نہ مانگو مہدی حسن

نامعلوم

اپنے ہاتھوں کی لکیروں میں سجا لے مجھ کو

اپنے ہاتھوں کی لکیروں میں سجا لے مجھ کو نامعلوم

اپنے ہاتھوں کی لکیروں میں سجا لے مجھ کو

اپنے ہاتھوں کی لکیروں میں سجا لے مجھ کو نامعلوم

اپنے ہاتھوں کی لکیروں میں سجا لے مجھ کو

اپنے ہاتھوں کی لکیروں میں سجا لے مجھ کو نامعلوم

اپنے ہاتھوں کی لکیروں میں سجا لے مجھ کو

اپنے ہاتھوں کی لکیروں میں سجا لے مجھ کو اسد امانت علی

اپنے ہونٹوں پر سجانا چاہتا ہوں

اپنے ہونٹوں پر سجانا چاہتا ہوں جگجیت سنگھ

انگڑائی پر انگڑائی لیتی ہے رات جدائی کی

انگڑائی پر انگڑائی لیتی ہے رات جدائی کی چترا سنگھ

اک جام کھنکتا جام کہ ساقی رات گزرنے والی ہے

اک جام کھنکتا جام کہ ساقی رات گزرنے والی ہے ذوالفقار علی بخاری

پریشاں رات ساری ہے ستارو تم تو سو جاؤ

پریشاں رات ساری ہے ستارو تم تو سو جاؤ اقبال بانو

تم پوچھو اور میں نہ بتاؤں ایسے تو حالات نہیں

تم پوچھو اور میں نہ بتاؤں ایسے تو حالات نہیں متفرق

تم پوچھو اور میں نہ بتاؤں ایسے تو حالات نہیں

تم پوچھو اور میں نہ بتاؤں ایسے تو حالات نہیں بھوپندر سنگھ

تم پوچھو اور میں نہ بتاؤں ایسے تو حالات نہیں

تم پوچھو اور میں نہ بتاؤں ایسے تو حالات نہیں نامعلوم

تمہاری انجمن سے اٹھ کے دیوانے کہاں جاتے

تمہاری انجمن سے اٹھ کے دیوانے کہاں جاتے سجاد حسین

تمہاری انجمن سے اٹھ کے دیوانے کہاں جاتے

تمہاری انجمن سے اٹھ کے دیوانے کہاں جاتے چترا سنگھ

تمہاری انجمن سے اٹھ کے دیوانے کہاں جاتے

تمہاری انجمن سے اٹھ کے دیوانے کہاں جاتے حبیب ولی محمد

تمہاری انجمن سے اٹھ کے دیوانے کہاں جاتے

تمہاری انجمن سے اٹھ کے دیوانے کہاں جاتے عثمان میر

جو بھی غنچہ ترے ہونٹوں پہ کھلا کرتا ہے

جو بھی غنچہ ترے ہونٹوں پہ کھلا کرتا ہے نسیم بیگم

چاندی جیسا رنگ ہے تیرا سونے جیسے بال

چاندی جیسا رنگ ہے تیرا سونے جیسے بال پنکج اداس

حسن کو چاند جوانی کو کنول کہتے ہیں

حسن کو چاند جوانی کو کنول کہتے ہیں سلمان علوی

دل جلتا ہے شام سویرے

دل جلتا ہے شام سویرے مہران امروہی

دل کو غم_حیات گوارا ہے ان دنوں

دل کو غم_حیات گوارا ہے ان دنوں نامعلوم

گرمیٔ_حسرت_ناکام سے جل جاتے ہیں

گرمیٔ_حسرت_ناکام سے جل جاتے ہیں نسیم بیگم

گرمیٔ_حسرت_ناکام سے جل جاتے ہیں

گرمیٔ_حسرت_ناکام سے جل جاتے ہیں فریدہ خانم

گرمیٔ_حسرت_ناکام سے جل جاتے ہیں

گرمیٔ_حسرت_ناکام سے جل جاتے ہیں زاہدہ پروین

گرمیٔ_حسرت_ناکام سے جل جاتے ہیں

گرمیٔ_حسرت_ناکام سے جل جاتے ہیں پنکج اداس

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے بھارتی وشواناتھن

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے صابری بردرس

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے جگجیت سنگھ

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے انورادھا پوڈوال

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے راج کمار رضوی

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے انوپ جلوٹا

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے نامعلوم

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے نامعلوم

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے نامعلوم

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے

وہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے نامعلوم

کیا ہے پیار جسے ہم نے زندگی کی طرح

کیا ہے پیار جسے ہم نے زندگی کی طرح جگجیت سنگھ

کیا ہے پیار جسے ہم نے زندگی کی طرح

کیا ہے پیار جسے ہم نے زندگی کی طرح غلام علی

یہ معجزہ بھی محبت کبھی دکھائے مجھے

یہ معجزہ بھی محبت کبھی دکھائے مجھے بھارتی وشواناتھن

یہ کس نے کہا تم کوچ کرو باتیں نہ بناؤ انشاؔ_جی

یہ کس نے کہا تم کوچ کرو باتیں نہ بناؤ انشاؔ_جی سلمان علوی

یہ معجزہ بھی محبت کبھی دکھائے مجھے

یہ معجزہ بھی محبت کبھی دکھائے مجھے جگجیت سنگھ

کلام شاعر بہ زبان شاعر

دیگر

Recitation

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
بولیے