رحمان فارس

غزل 15

نظم 8

اشعار 7

کہانی ختم ہوئی اور ایسی ختم ہوئی

کہ لوگ رونے لگے تالیاں بجاتے ہوئے

  • شیئر کیجیے

تیرے بن گھڑیاں گنی ہیں رات دن

نو برس گیارہ مہینے سات دن

  • شیئر کیجیے

شجر نے پوچھا کہ تجھ میں یہ کس کی خوشبو ہے

ہوائے شام الم نے کہا اداسی کی

وہ پہلے صرف مری آنکھ میں سمایا تھا

پھر ایک روز رگوں تک اتر گیا مجھ میں

مری تو ساری دنیا بس تمہی ہو

غلط کیا ہے جو دنیا دار ہوں میں

کتاب 1

 

ویڈیو 11

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر

رحمان فارس

Baithe hain chain se kahin jana to hai nahi

رحمان فارس

Chand aa betha hai pehlu mein, sitaro takhliya

رحمان فارس

Ishq saccha hai to kyun darte jhijhakte jaanve

رحمان فارس

Khaak udtii hai raat bhar mujh mein

رحمان فارس

Rehman Faris - Reciting at Jashn-e-Abbas Tabish

رحمان فارس

Rehman Faris poetry on Iqbal

رحمان فارس

Sadaayen dete huye khaak udaate huye

رحمان فارس

رحمان فارس

خاک اڑتی ہے رات_بھر مجھ میں

رحمان فارس

صدائیں دیتے ہوئے اور خاک اڑاتے ہوئے

رحمان فارس

متعلقہ شعرا

"اسلام آباد" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

بولیے