Riyaz Khairabadi's Photo'

ریاضؔ خیرآبادی

1853 - 1934 | خیراباد, انڈیا

خمریات کے لئے مشہور جب کہ کہا جاتا ہے کہ انہوں نے شراب کو کبھی ہاتھ نہیں لگایا

خمریات کے لئے مشہور جب کہ کہا جاتا ہے کہ انہوں نے شراب کو کبھی ہاتھ نہیں لگایا

ریاضؔ خیرآبادی

غزل 130

اشعار 112

دل جلوں سے دل لگی اچھی نہیں

رونے والوں سے ہنسی اچھی نہیں

مے خانے میں کیوں یاد خدا ہوتی ہے اکثر

مسجد میں تو ذکر مے و مینا نہیں ہوتا

  • شیئر کیجیے

مہندی لگائے بیٹھے ہیں کچھ اس ادا سے وہ

مٹھی میں ان کی دے دے کوئی دل نکال کے

  • شیئر کیجیے

بچ جائے جوانی میں جو دنیا کی ہوا سے

ہوتا ہے فرشتہ کوئی انساں نہیں ہوتا

  • شیئر کیجیے

اچھی پی لی خراب پی لی

جیسی پائی شراب پی لی

کتاب 12

تصویری شاعری 3

 

آڈیو 3

بام پر آئے کتنی شان سے آج

کوئی منہ چوم لے_گا اس نہیں پر

کچھ بھی ہو ریاضؔ آنکھ میں آنسو نہیں آتے

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

 

متعلقہ بلاگ

 

متعلقہ شعرا

"خیراباد" کے مزید شعرا

 

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI