Taashshuq Lakhnavi's Photo'

تعشق لکھنوی

1824 - 1892

غزل 13

اشعار 28

ہم کس کو دکھاتے شب فرقت کی اداسی

سب خواب میں تھے رات کو بیدار ہمیں تھے

جس طرف بیٹھتے تھے وصل میں آپ

اسی پہلو میں درد رہتا ہے

وہ کھڑے کہتے ہیں میری لاش پر

ہم تو سنتے تھے کہ نیند آتی نہیں

  • شیئر کیجیے

کتاب 8

افکار تعشق

جلد-002

1953

افکار تعشق

جلد - 001

1950

براہین غم

جلد۔001

1927

دیوان حضرت تعشق

 

 

دیوان تعشق علیہ الرحمہ

 

 

گلدستۂ تعشق

 

1874

تعشق لکھنوی : حیات، شخصیت، فن اور کلام

 

2007

حدیث دل

شمارہ نمبر ـ 023

2008

 

متعلقہ شعرا

  • مرزا غالب مرزا غالب ہم عصر
  • لالہ مادھو رام جوہر لالہ مادھو رام جوہر ہم عصر
  • میر تسکینؔ دہلوی میر تسکینؔ دہلوی ہم عصر
  • سخی لکھنوی سخی لکھنوی ہم عصر
  • مفتی صدرالدین آزردہ مفتی صدرالدین آزردہ ہم عصر
  • مرزا سلامت علی دبیر مرزا سلامت علی دبیر ہم عصر
  • شیخ ابراہیم ذوقؔ شیخ ابراہیم ذوقؔ ہم عصر
  • مصطفیٰ خاں شیفتہ مصطفیٰ خاں شیفتہ ہم عصر
  • بہادر شاہ ظفر بہادر شاہ ظفر ہم عصر
  • شاد لکھنوی شاد لکھنوی ہم عصر