Tahir Azeem's Photo'

طاہر عظیم

1978 | بحرین

طاہر عظیم

غزل 11

اشعار 14

جو ترے انتظار میں گزرے

بس وہی انتظار کے دن تھے

شہر کی اس بھیڑ میں چل تو رہا ہوں

ذہن میں پر گاؤں کا نقشہ رکھا ہے

یہ جو ماضی کی بات کرتے ہیں

سوچتے ہوں گے حال سے آگے

مجھ کو بھی حق ہے زندگانی کا

میں بھی کردار ہوں کہانی کا

سوچ اپنی ذات تک محدود ہے

ذہن کی کیا یہ تباہی کچھ نہیں

کتاب 1

کلیات سعید قیس

 

2016

 

مزید دیکھیے