Zafar Iqbal's Photo'

ظفر اقبال

1933 | لاہور, پاکستان

ممتاز ترین جدید شاعروں میں معروف ۔ رجحان سازشاعر

ممتاز ترین جدید شاعروں میں معروف ۔ رجحان سازشاعر

غزل 132

اشعار 151

اب کے اس بزم میں کچھ اپنا پتہ بھی دینا

پاؤں پر پاؤں جو رکھنا تو دبا بھی دینا

  • شیئر کیجیے

اس کو آنا تھا کہ وہ مجھ کو بلاتا تھا کہیں

رات بھر بارش تھی اس کا رات بھر پیغام تھا

جھوٹ بولا ہے تو قائم بھی رہو اس پر ظفرؔ

آدمی کو صاحب کردار ہونا چاہیئے

مزاحیہ 4

 

ای- کتاب 7

آب رواں

 

1978

اب تک۔ کلیات غزل

جلد۔003

2006

اب تک۔ کلیات غزل

جلد۔002

2005

اب تک ۔کلیات غزل

جلد۔004

2012

اب تک ۔کلیات غزل

جلد۔001

2004

غبار آلود سمتوں کا سراغ

 

1988

ہے ہنومان

 

1997

 

تصویری شاعری 25

گفتگو ان سے روز ہوتی ہے مدتوں سامنا نہیں ہوتا

اداسی آسماں ہے دل مرا کتنا اکیلا ہے پرندہ شام کے پل پر بہت خاموش بیٹھا ہے میں جب سو جاؤں ان آنکھوں پہ اپنے ہونٹ رکھ دینا یقیں آ جائے_گا پلکوں تلے بھی دل دھڑکتا ہے تمہارے شہر کے سارے دیے تو سو گئے کب کے ہوا سے پوچھنا دہلیز پہ یہ کون جلتا ہے اگر فرصت ملے پانی کی تحریروں کو پڑھ لینا ہر اک دریا ہزاروں سال کا افسانہ لکھتا ہے کبھی میں اپنے ہاتھوں کی لکیروں سے نہیں الجھا مجھے معلوم ہے قسمت کا لکھا بھی بدلتا ہے

اب کے اس بزم میں کچھ اپنا پتہ بھی دینا پاؤں پر پاؤں جو رکھنا تو دبا بھی دینا

مان موسم کا کہا چھائی گھٹا جام اٹھا آگ سے آگ بجھا پھول کھلا جام اٹھا پی مرے یار تجھے اپنی قسم دیتا ہوں بھول جا شکوہ گلہ ہاتھ ملا جام اٹھا ہاتھ میں چاند جہاں آیا مقدر چمکا سب بدل جائے_گا قسمت کا لکھا جام اٹھا ایک پل بھی کبھی ہو جاتا ہے صدیوں جیسا دیر کیا کرنا یہاں ہاتھ بڑھا جام اٹھا پیار ہی پیار ہے سب لوگ برابر ہیں یہاں مے_کدہ میں کوئی چھوٹا نہ بڑا جام اٹھا

اگر اس کھیل میں اب وہ بھی شامل ہونے والا ہے تو اپنا کام پہلے سے بھی مشکل ہونے والا ہے ہوا شاخوں میں رکنے اور الجھنے کو ہے اس لمحے گزرتے بادلوں میں چاند حائل ہونے والا ہے اثر اب اور کیا ہونا تھا اس جان_تغافل پر جو پہلے بیش و کم تھا وہ بھی زائل ہونے والا ہے زیادہ ناز اب کیا کیجیے جوش_جوانی پر کہ یہ طوفاں بھی رفتہ رفتہ ساحل ہونے والا ہے ہمیں سے کوئی کوشش ہو نہ پائی کارگر ورنہ ہر اک ناقص یہاں کا پیر_کامل ہونے والا ہے حقیقت میں بہت کچھ کھونے والے ہیں یہ سادہ_دل جو یہ سمجھے ہوئے ہیں ان کو حاصل ہونے والا ہے ہمارے حال_مستوں کو خبر ہونے سے پہلے ہی یہاں پر اور ہی کچھ رنگ_محفل ہونے والا ہے چلو اس مرحلے پر ہی کوئی تدبیر کر دیکھو وگرنہ شہر میں پانی تو داخل ہونے والا ہے ظفرؔ کچھ اور ہی اب شعبدہ دکھلائیے ورنہ یہ دعوائے_سخن_دانی تو باطل ہونے والا ہے

ویڈیو 11

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
مزاحیہ ویڈیو
Bashir Badr at International Mushaira 2002, Houston

Dr. Basheer Badr reciting at International Mushaira 2002 organised by Aligarh Alumni Association Houston USA ظفر اقبال

Bashir Badr reciting at Hind-o-Pak Dosti Aalmi Mushaira 2003, organized by Aligarh Alumni Association Houston, USA.

ظفر اقبال

یوں_ہی بے_سبب نہ پھرا کرو کوئی شام گھر میں رہا کرو

ظفر اقبال

لوگ ٹوٹ جاتے ہیں ایک گھر بنانے میں

ظفر اقبال

آڈیو 15

پرکھنا مت پرکھنے میں کوئی اپنا نہیں رہتا

خامشی اچھی نہیں انکار ہونا چاہئے

لرزش_پردۂ_اظہار کا مطلب کیا ہے

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

شعرا متعلقہ

  • ظفر گورکھپوری ظفر گورکھپوری ہم عصر
  • شہریار شہریار ہم عصر
  • احمد فراز احمد فراز ہم عصر
  • بشر نواز بشر نواز ہم عصر
  • سدرشن فاخر سدرشن فاخر ہم عصر
  • احمد مشتاق احمد مشتاق ہم عصر

شعرا کے مزید "لاہور"

  • حبیب جالب حبیب جالب
  • منیر نیازی منیر نیازی
  • ناصر کاظمی ناصر کاظمی
  • قتیل شفائی قتیل شفائی
  • اختر شیرانی اختر شیرانی
  • حفیظ جالندھری حفیظ جالندھری
  • محمد حسین آزاد محمد حسین آزاد
  • محمد حنیف رامے محمد حنیف رامے
  • مظفر وارثی مظفر وارثی
  • شہزاد احمد شہزاد احمد